آرٹیکلز معلومات

صنف نازک ہرگز نازک نہیں ہے۔

سابق امریکی خاتون اول ایلینور روزویلٹ نے ایک بار کہا تھا کہ خواتین ٹی بیگ کی طرح ہوتیں ہیں جب تک گرم پانی میں نہ ڈالو ان کی طاقت کا اندازہ نہیں لگایا جاسکتا۔ سالوں قبل کہی اس بات کی تصدیق حال ہی میںیونیورسٹی آف سدرن ڈنمارک نے سائنسی بنیادوں پرکرتے ہوئے کہا ہے کہ خواتین مردوں کے مقابلے میں خراب حالات، المیوں اور وباؤں کابہتر مقابلہ کرنے کی صلاحیت رکھتیں ہیں۔

تحقیق میں قحط، غلامی اور وبائی امراض کے متعدد کیس کے مطالعے کے بعد محقق اس نتیجے پر پہنچے ہیں دنیا میں کوئی وبا پھیلی ہو یا کہیں قحط پڑا ہو خواتین نے ہمیشہ حالات کا ڈٹ کر مقابلہ کیا اور اسی لیے مردوں کے مقابلے میں ان میں شرح اموات ہمیشہ کم رہی ہے۔ تحقیق میں آئرلینڈ میں آئے قحط، آئس لینڈ میں پھیلی خسرہ کی وبا اور امریکا کے سیا ہ فام غلاموں سمیت متعدد کیسز پر تحقیق کی گئی جس میں ماہرین نے خواتین کو حیاتیاتی طور پرمظبوط اعصاب اور بہتر قوت مدافعت کا حامل قرار دیا۔ تحقیق کاروں کا مزید کہنا ہے کہ اسی طرح نومولود لڑکوں کے مقابلے میں لڑکیوں میں پیدائش کی شرح بہتر ہے جو ثابت کرتی ہے کہ صنف نازک ہر گز نازک نہیں ہے۔